الغاشية   سورة  : Al-Ghaashiya

سورة Sura   الغاشية   Al-Ghaashiya
بَلْ تُؤْثِرُونَ الْحَيَاةَ الدُّنْيَا (16) وَالْآخِرَةُ خَيْرٌ وَأَبْقَىٰ (17) إِنَّ هَٰذَا لَفِي الصُّحُفِ الْأُولَىٰ (18) صُحُفِ إِبْرَاهِيمَ وَمُوسَىٰ (19)
الغاشية Al-Ghaashiya
هَلْ أَتَاكَ حَدِيثُ الْغَاشِيَةِ (1) وُجُوهٌ يَوْمَئِذٍ خَاشِعَةٌ (2) عَامِلَةٌ نَّاصِبَةٌ (3) تَصْلَىٰ نَارًا حَامِيَةً (4) تُسْقَىٰ مِنْ عَيْنٍ آنِيَةٍ (5) لَّيْسَ لَهُمْ طَعَامٌ إِلَّا مِن ضَرِيعٍ (6) لَّا يُسْمِنُ وَلَا يُغْنِي مِن جُوعٍ (7) وُجُوهٌ يَوْمَئِذٍ نَّاعِمَةٌ (8) لِّسَعْيِهَا رَاضِيَةٌ (9) فِي جَنَّةٍ عَالِيَةٍ (10) لَّا تَسْمَعُ فِيهَا لَاغِيَةً (11) فِيهَا عَيْنٌ جَارِيَةٌ (12) فِيهَا سُرُرٌ مَّرْفُوعَةٌ (13) وَأَكْوَابٌ مَّوْضُوعَةٌ (14) وَنَمَارِقُ مَصْفُوفَةٌ (15) وَزَرَابِيُّ مَبْثُوثَةٌ (16) أَفَلَا يَنظُرُونَ إِلَى الْإِبِلِ كَيْفَ خُلِقَتْ (17) وَإِلَى السَّمَاءِ كَيْفَ رُفِعَتْ (18) وَإِلَى الْجِبَالِ كَيْفَ نُصِبَتْ (19) وَإِلَى الْأَرْضِ كَيْفَ سُطِحَتْ (20) فَذَكِّرْ إِنَّمَا أَنتَ مُذَكِّرٌ (21) لَّسْتَ عَلَيْهِم بِمُصَيْطِرٍ (22) إِلَّا مَن تَوَلَّىٰ وَكَفَرَ (23) فَيُعَذِّبُهُ اللَّهُ الْعَذَابَ الْأَكْبَرَ (24) إِنَّ إِلَيْنَا إِيَابَهُمْ (25) ثُمَّ إِنَّ عَلَيْنَا حِسَابَهُم (26)
الصفحة Page 592
(16) مگر تم لوگ تو دنیا کی زندگی کو اختیار کرتے ہو
(17) حالانکہ آخرت بہت بہتر اور پائندہ تر ہے
(18) یہ بات پہلے صحیفوں میں (مرقوم) ہے
(19) (یعنی) ابراہیم اور موسیٰ کے صحیفوں میں
الغاشية Al-Ghaashiya
(1) بھلا تم کو ڈھانپ لینے والی (یعنی قیامت کا) حال معلوم ہوا ہے
(2) اس روز بہت سے منہ (والے) ذلیل ہوں گے
(3) سخت محنت کرنے والے تھکے ماندے
(4) دہکتی آگ میں داخل ہوں گے
(5) ایک کھولتے ہوئے چشمے کا ان کو پانی پلایا جائے گا
(6) اور خار دار جھاڑ کے سوا ان کے لیے کوئی کھانا نہیں (ہو گا)
(7) جو نہ فربہی لائے اور نہ بھوک میں کچھ کام آئے
(8) اور بہت سے منہ (والے) اس روز شادماں ہوں گے
(9) اپنے اعمال (کی جزا) سے خوش دل
(10) بہشت بریں میں
(11) وہاں کسی طرح کی بکواس نہیں سنیں گے
(12) اس میں چشمے بہ رہے ہوں گے
(13) وہاں تخت ہوں گے اونچے بچھے ہوئے
(14) اور آبخورے (قرینے سے) رکھے ہوئے
(15) اور گاؤ تکیے قطار کی قطار لگے ہوئے
(16) اور نفیس مسندیں بچھی ہوئی
(17) یہ لوگ اونٹوں کی طرف نہیں دیکھتے کہ کیسے (عجیب) پیدا کیے گئے ہیں
(18) اور آسمان کی طرف کہ کیسا بلند کیا گیا ہے
(19) اور پہاڑوں کی طرف کہ کس طرح کھڑے کیے گئے ہیں
(20) اور زمین کی طرف کہ کس طرح بچھائی گئی
(21) تو تم نصیحت کرتے رہو کہ تم نصیحت کرنے والے ہی ہو
(22) تم ان پر داروغہ نہیں ہو
(23) ہاں جس نے منہ پھیرا اور نہ مانا
(24) تو خدا اس کو بڑا عذاب دے گا
(25) بےشک ان کو ہمارے پاس لوٹ کر آنا ہے
(26) پھر ہم ہی کو ان سے حساب لینا ہے